Home / اہم خبریں / حکومت کے24 گھنٹوں میں ہی معیشت متعلق جھوٹ ثابت

حکومت کے24 گھنٹوں میں ہی معیشت متعلق جھوٹ ثابت

اسلام آباد(نمائندہ کماس) پاکستان پیپلزپارٹی کی نائب صدر سینیٹر شیری رحمان نے کہا ہے کہ ڈالرکی قیمت بڑھنے سے بیرونی قرضوں میں760ارب روپے کا اضافہ ہوگیا ہے،ثابت ہوگیا کہ حکومت کے پاس کوئی معاشی پالیسی نہیں ہے،حکومت آئی توڈالر124روپے کا تھا سودن میں142تک پہنچ گیا۔ نائب صدرپیپلزپارٹی سینیٹرشیری رحمان نے ڈالرکی بڑھتی ہوئی قیمت پرردعمل دیتے ہوئے کہا کہ حکومتی دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے۔حکومت آئی توڈالر124روپے کا تھا سودن میں142تک پہنچ گیا۔ حکومت اپنی نااہلی چھپانے کیلئے گزشتہ حکومتوں پرالزام تراشی بند کرےشیری رحمان نے کہا کہ 24 گھنٹوں میں حکومت کے معیشت متعلق جھوٹ ثابت ہوگئے۔ ڈالرکی قیمت بڑھنے سے بیرونی قرضوں میں760ارب روپے کا اضافہ ہوگیا ہے۔شیری رحمان نے کہا کہ ثابت ہوگیا اس حکومت کے پاس کوئی معاشی پالیسی نہیں۔حکومت اپنی ناکامی اور نااہلی قبول کر لے۔ اب تو حکومتی نمائندے بھی کہتے ہیں ڈالر 145 تک جائے گا۔ واضح رہے انٹربینک مارکیٹ میں امریکی ڈالر تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا۔ ٹریڈنگ کے دوران ڈالر کی قیمت میں 8 روپے اضافہ ہوا جس کے بعد انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر 142 روپے کا ہوگیا۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ ایک سال کے دوران روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قیمت میں 36 فیصد اضافہ ہوچکا ہے جبکہ موجودہ حکومت کی مدت کے تین ماہ کے دوران اب تک ڈالر کی قدر میں 18 روپے کا اضافہ ہوا ہے۔ذرائع کے مطابق انٹر بینک میں ڈالر مہنگا ہونے سے روپے کی قدر گرنے کے باعث قرضوں میں 760 ارب روپے کا اضافہ بھی ہوگیا۔ ڈالر تاریخ میں پہلی مرتبہ 142 روپے کی سطح پر پہنچ گیا۔ نجی ٹی وی کے مطابق معاشی تجزیہ کار محمد سہیل کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف نے ڈالر اور روپے کی قدر میں توازن لانے پر زور دیا تھا اور بظاہر لگ رہا ہے کہ حکومت کی جانب سے ڈالر میں اضافے کو مینج کیا جارہا ہے اور ہم آئی ایم ایف پروگرام کی طرف جارہے ہیں۔محمد سہیل کا کہنا تھا کہ آئندہ چند ہفتوں میں ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر 150 روپے تک گر سکتی ہے۔

About رخسار

Check Also

لاہور زلزلے سے لرز اُٹھا، جھٹکوں سے لوگوں میں خوف وہراس پھیل گیا

لاہور(نیوزڈیسک )لاہور زلزلے سے لرز اُٹھا، جھٹکوں سے لوگوں میں خوف وہراس پھیل گیا اور …

جواب دیں